Flag

An official website of the United States government

امریکی حکومت کی جانب سے پاکستان میں کورونا اور دیگر وبائی امراض کی تشخیصی صلاحیت بڑھانے کیلئے موبائل لیبارٹری
کی طرف سے
2 منٹ پڑھیں
اگست 4, 2022

The U.S. government today presented a mobile biosafety laboratory to the Sindh Department of Health.

 

کراچی: امریکی حکومت نے کورونا اور دیگر وبائی امراض کی تشخیص میں پاکستان کی استعداد بڑھانے کی خاطر موبائل بایو سیفٹی لیبارٹری محکمہ صحت سندھ کے حکام کے حوالے کردی گئی ۔ یہ لیارٹری پاکستان کے ان دوردراز و پسماندہ علاقوں کیلئے فراہم کی گئی ہے، جہاں ٹیسٹنگ اور نگرانی کے وسائل بلکل محدود ہیں۔ اس موبائل لیبارٹری سے بیماریوں کی فوری تشخیص، ٹیسٹ کا دورانیہ کم کرنے اور طبی عملے کی صحت کے تحفظ کے حوالے سے مدد حاصل ہوگی

امریکی قونصل جنرل مارک اسٹروہ اور سندھ کی وزیر برائے صحت و بہود آبادی ڈاکٹر عذرا فضل پیچوہو نے تقریب میں خصوصی شرکت کی، جبکہ محکمہ صحت سندھ کے حکام بھی موجود تھے۔ یہ تقریب 6 جولائی کو اسلام آباد میں ہونیوالی مرکزی تقریب کا تسلسل ہے، جس میں امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم کی جانب سے چار موبائل لیبارٹریز پاکستان کے ادارے برائے قومی صحت کے حکام کے حوالے کی گئیں۔

اس موقع پر امریکی قونصل جنرل مارک اسٹروہ نے کہا کہ “موبائل بایو سیفٹی لیبارٹری سندھ کے محکمہ صحت کے حوالے کرنا میرے لئے باعث خوشی ہے، جس کا مقصد سندھ اور بلوچستان کی عوام کو بہتر طبی خدمات مہیا کرنا ہے۔ اس لیبارٹری کی مدد سے ہنگامی اور وبا کے حالات میں فوری اور مؤثر کام کرنے کیلئے پاکستانی حکومت کی استعداد میں اضافہ ہوگا۔” قونصل جنرل اسٹروہ نے کووڈ-19 کا مقابلہ کرنے اور کامیاب ویکسینیشن پر پورے پاکستان کے طبی عملے کی خدمات کو سراہا،  جبکہ وزیر صحت سندھ ڈاکٹر عذرا فضل پیچوہو نے صوبے میں صحت کی خدمات بہتر بنانے، خصوصی طورپر کووڈ-19 کے بحران میں امریکی حکومت کے جانب سے یو ایس ایڈ کے ذریعے  مدد کرنے پر خوشی کا اظہار کیا۔

کووڈ -19 کے پھیلاؤ سے آج تک امریکی حکومت نے پاکستان سمیت دنیا کے 120 سے زائد ممالک میں عالمی وبا کا مقابلہ کرنے اور انسانی زندگیاں بچانے کیلئے کام کیا ہے۔ امریکا کی جانب سے پاکستان کیساتھ جاری تعاون میں ہنگامی امداد، نظام صحت کی بہتری، ویکسین کی تیاری و تقسیم،  تعلیم برائے صحت اور طبی عملے کی صحت کے تحفظ کیلئے مدد شامل ہے۔

امریکی حکومت نے پاکستان کو کووڈ-19 کی 7 کروڑ 70 لاکھ خوراکیں، کورونا کی  فوری تشخیص کی 10 لاکھ ٹیسٹ کٹس اور صحت سے متعلق خدمات امداد کے طور پر فراہم کی ہیں۔ علاوہ ازیں عالمی وبا کے دوران امریکی حکومت کی جانب سے پاکستان کو 70.4 ملین ڈالرز براہ راست اور 13.8 ملین ڈالرز کورونا کا مقابلہ کرنے کیلئے عوامی امداد کی مدد میں جاری کیئے گئے۔ جبکہ پاکستان میں ویکیسینیشن کیلئے تعاون کے تحت یو ایس ایڈ میں 2 کروڑ ڈالرز کے اضافی فنڈز کے اجراء کا  بھی ارادہ ہے۔  یہ خدمات تباہ کن وبا سے نکلنے کیلئے پاکستانی عوام کیساتھ بھرپور تعاون کا حصہ ہیں۔

یو ایس ایڈ کے پاکستان میں امدادی پروگرامز اور منصوبوں  کے باری میں مزید معلومات کیلئے  وزٹ کریں: www.usaid.gov/pakistan