Flag

An official website of the United States government

سیلاب سےمتاثرہ اضلاع کے طالبعلموں کے لیے امریکہ کی جانب سے ۵۰۰ نئےوظائف کا اعلان
کی طرف سے
2 منٹ پڑھیں
مارچ 7, 2023

 

اسلام آباد (۷ مارچ ۲۰۲۳ء- امریکی حکومت نے پاکستان میں سیلاب سے متاثرہ اضلاع سے تعلق رکھنے والے  یونیورسٹی سطح کے پاکستانی طالبعلموں کو اعلیٰ تعلیم کی تکمیل  میں معاونت  کے لیے ۵۰۰  نئےوظائف دینے کا  اعلان کیا ہے۔ یہ اعلان پاکستان میں  متعین امریکی سفیر ڈونلڈ بلَوم نے خواتین کے عالمی دن  کے موقع پر ہائر ایجوکیشن کمیشن ( ایچ اِی سی)  کی جانب سے اسلام آباد میں خواتین دانشوروں کی کامیابیوں  کا جشن  منانےکے لیے منعقد ایک تقریب  کے دوران کیا۔

اس تقریب میں وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی احسن اقبال، ہائر ایجوکیشن کمیشن  کے چیئرمین  ڈاکٹر مختار احمد، نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے چیئرمین  لیفٹیننٹ جنرل انعام حیدر ملک، ایچ ای سی کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر شائستہ سہیل،  یو ایس ایڈ کے مشن ڈائریکٹر رِیڈ ایشل مین، یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرز،  حاضر اور سابقہ طالبعلموں نے شرکت کی۔

امریکہ  یو ایس ایڈ کے توسط سے   مالی طور پر پسماندہ مگر تعلیمی میدان میں ہونہار  طالبعلموں کو  اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لیے وظائف دیتا  ہے ،جن میں  ہائر ایجوکیشن کمیشن کے ساتھ اشتراک میں امریکی حکومت کی جانب  سے اہلیت کی بنیاد پر ضرورتمند طالبعلموں کو   چھ ہزار سے زیادہ وظائف کی فراہمی بھی شامل ہے ۔  امریکی حکومت کی جانب سے   اعلیٰ تعلیم کے حصول میں خواتین کی معاونت کی پالیسی کے تحت مذکورہ  وظائف میں سے  ۶۰ فیصد خواتین کو فراہم کیے گئے ہیں.

تقریب سے خطاب کرتے ہوئےا مریکہ کے سفیر ڈونلڈ بلَوم نے کہا کہ خواتین کا عالمی دن نہ فقط ہماری ماؤں، دادیوں نانیوں، بہنوں اور بیٹیوں کی سماجی، معاشی، ثقافتی اور سیاسی  کامیابیوں کا جشن منانے کا موقع ہے بلکہ یہ دن   صنفی مساوات یقینی بنانے کی جدوجہد میں تیزی لانےاورصنف سے وابستہ گِھسے پِٹے تصورات کے خاتمہ کا بھی متقاضی ہے۔

ایچ ای سی کے چیئرمین  ڈاکٹر مختار احمد نے کہا کہ پاکستان میں کلیدی اہمیت کے حامل شعبوں بالخصوص تعلیم کے میدان  میں  امریکی حکومت کی جانب سے   حمایت قابل ستائش ہے۔ وظائف  حاصل کرنے والے    متعدد پسماندہ  طالبعلم  نہ صرف یونیورسٹی سطح کی تعلیم مکمل کرتے ہوئے خود کو اور اپنے خاندانوں کو غربت سے باہر نکالنے میں  کامیاب ہوتے ہیں بلکہ پاکستان کی  معیشت   کو متحرک رکھنے والی مہارتوں اور معلومات  کی رسد بھی مہیا ہوتی ہے۔

وفاقی وزیرِ منصوبہ بندی  احسن اقبال نے سیلاب سے متاثرہ طالبعلموں کے لیے  امریکی معاونت کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے تباہ کُن سیلاب سے  بہت زیادہ نقصان برداشت کیا ہے اور لاکھوں افراد   بے گھر اور بے  روزگار ہوئے ہیں۔ اس صورتحال میں ریاستہائے متحدہ امریکہ اور دیگر مُخیر اداروں کا  انسانی ہمدری کی بنیاد پر ردعمل قابل تحسین ہے۔

اسکالرشپ سے مستفید ہونے والی ایک طالبہ جینیفر  عندلیب نے  اعلیٰ تعلیم کے حُصول میں خود کو درپیش آنے والی رکاوٹوں کی روداد بیان کرتے ہوئے کہا کہ  معاشرہ میں مثبت تبدیلی صرف تعلیم میں سرمایہ  کاری کرنے سے ہی لائی جا سکتی ہے اور تعلیم یافتہ اور بااختیار خواتین پاکستان  کا روشن مستقبل یقینی بنانے کے لیے نمایاں اہمیت رکھتی ہیں ۔

پاکستان میں تعلیم کے شعبہ میں یو ایس ایڈ کی جانب سے کیے گئے اقدامات کے بارے میں مزید معلومات کے لیے مندرجہ ذیل ویب سائٹ ملاحظہ کریں:

https://www.usaid.gov/pakistan/education

###