قونصل جنرل ولیم مارٹن

قونصل جنرل مارٹن

ولیم مارٹن منسٹر قونصلر کے منصب کے سینئر فارن سروس کے رکن ہیں۔ انہوں نے حال ہی میں مغربی افغانستان میں سینئر سویلین نمائندے کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔ ولیم مارٹن نے ۲۰۱۲ء سے ۲۰۱۴ء تک یو سی ایل اے میں ڈپلومیٹ اِن ریذیڈنس کی حیثیت سے کام کیا۔ دنیا کے سب سے بڑے اسلامی شہر اور ہر نسل، مذہب اور لسانی گروہ سے تعلق رکھنے والے لوگوں کے شہر کراچی میں سال ۲۰۱۰ء سے ۲۰۱۲ء تک پرنسپل آفیسر کی حیثیت سے انہوں نے پاکستان کے ۶۰ فیصد رقبے میں، جس میں افغانستان اور ایران کے ساتھ سرحد کے حامل صوبہ بلوچستان اور اس کا دارالحکومت کوئٹہ بھی شامل ہیں، امریکی سفارتکاری کی قیادت کی۔ اُنہوں نے پاکستان کے ذرائع ابلاغ کے ساتھ بھرپورتعلقات قائم رکھے۔

اس سے قبل، ولیم مارٹن نے دہشت گردی، منشیات اور ترک ِوطن جیسے مسائل کا سامنے کرنے والے بوگوٹا، کولمبیا میں قونصل جنرل کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔ وہ گوان ژو، چین میں ڈپٹی پرنسپل آفیسر اور قونصلر چیف بھی رہے، جہاں "سارس” (ایس اے آر ایس )اور برڈانفلوئنز اکی وباء پھوٹنے کے دوران اُن کی خدمات کا اعتراف کیا گیا۔ علاوہ ازیں ولیم مارٹن فلپائن اور جاپان میں بھی کام کرچکے ہیں اوراُنہوں نے انڈونیشیا میں دو مرتبہ خدمات انجام دیں۔ جکارتہ میں قائم مقام قونصل جنرل کی حیثیت سے انہیں امریکی شہریوں کو دہشت گردی کے خطرات اور مشرقی تیمور میں اُس کی آزادی کی جدوجہد کے دوران خانہ جنگی سے لاحق خطرات سے محفوظ رکھنے پر باربرا واٹسن ایوارڈ سے نوازا گیا۔

ولیم مارٹن نے بی اے کی تعلیم یونیورسٹی آف کیلی فورنیا، برکلے اور ماسٹرز ڈگری کی تعلیم فینکس، ایریزونا میں امریکن گریجویٹ اسکول آف انٹرنیشنل مینجمنٹ (تھنڈر برڈ) سے مکمل کی۔ وہ کیلی فورنیا کے رہائشی ہیں۔