پاکستان کے لیے امریکی امداد

  1. حقائق نامہ
  2. پاکستان کے لیے امریکی امداد

پاکستان اورامریکہ کے لوگ مشترکہ طورپراستحکام،قیام امن اورعلاقائی اوربین الاقوامی معاشی ترقی کے فروغ کے خواہاں ہیں۔اس مقصد کے حصول  کے لیے امریکی سویلین امداد نے توانائی، استحکام،تعلیم اورصحت اور معاشی ترقی سمیت پاکستانیوں کے لیے کلیدی اہمیت کے حامل مسائل کے حل کے لیےحقیقی نتائج دیے ہیں۔ ۲۰۰۹ء سے لیکراب تک امریکی حکومت نے پاکستان کوسویلین امداد کی مد میں پانچ ارب ڈالراور ہنگامی قدرتی آفات سے نمٹنے کے لیےایک ارب ڈالر سے زیادہ امداد فراہم کی ہے۔

ریاستہائے متحدہ امریکہ نے پاکستان کو چھ کروڑ دس لاکھ  ٹیکے بھی عطیہ کیے ہیں،اس کے ساتھ سات کروڑاسّی لاکھ ڈالرمالیت کی براہ راست اور سامان کی مد میں امداد بھی کووڈ-۱۹کے سدباب کے لیے پاکستان کو فراہم کی گئی ہے۔ پاکستان کے لیے امریکی امداد کی نوعیت ہمیشہ معاونت کی شکل میں ہونے کی وجہ سے پاکستان کی معیشت پرقرض کا بوجھ اوراخرجات اورآمدن میں عدم توازن کے مسائل پیدا نہیں ہوتے۔

یہ عزم ہمارے اس پختہ یقین کی عکاسی کرتا ہے کہ اگر پاکستان محفوظ ، پُرامن و خوشحال ہوگا تو یہ نہ صرف پاکستان کے اپنے لیے بہتر بلکہ خطہ کے لیے بھی اچھا اور دنیا بھر کے لیے بھی خوش آئند ہوگا۔ خطہ میں تعمیری کردار کا حامل ایک مستحکم، خوشحال اورجمہوری پاکستان امریکہ کے طویل المیعادقومی مفاد میں ہے۔